شرمین عبید چنائے ایک اور آسکر ایوارڈ لینے میں کامیاب

پاکستانی فلمساز اور ہدایتکارہ شرمین عبید چنائے نے اپنی مختصر دستاویزی فلم ’دا گرل اِن دا ریور: پرائس فار فوگیونیس‘ کے لیے آسکر ایوارڈ حاصل کر لیا ہے۔ یہ ان کے کریئر کا دوسرا اکیڈمی ایوارڈ ہے۔ انھوں نے سنہ 2012 میں دستاویزی فلم ’سیونگ فیس‘ کے لیے بھی آسکر ایوارڈ جیتا تھا۔

امریکی شہر لاس اینجلس میں منعقدہ 88ویں اکیڈمی ایوارڈز میں ’غیرت کے نام پر قتل‘ کے موضوع پر بنائی جانے والی اس فلم کا مقابلہ چار دیگر فلموں سے تھا۔

اس فلم کو شرمین عبید چنائے فلمز اور ایچ بی او نے مشترکہ طور پر تیار کیا تھا۔

یہ دستاویزی فلم صبا نامی 18 سالہ لڑکی کی کہانی ہے جسے اس کے رشتے داروں نے غیرت کے نام پر قتل کرنے کی کوشش کے بعد مردہ سمجھ کر دریا میں پھینک دیاتھا مگر وہ معجزانہ طور پر بچ گئی تھی۔

زندہ بچنے کے بعد اس نے ہسپتال کے ڈاکٹروں اور پولیس کےساتھ مل کر اپنا مقدمہ لڑا مگر پھر دباؤ میں آ کر حملہ آوروں کو معاف کر دیا تھا۔

ایوارڈ حاصل کرنے کے بعد شرمین عبید چنائے نے کہا کہ پرعزم خواتین کی محنت کا نتیجہ کامیابی کی صورت میں سامنے آتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ انھیں خوشی ہے کہ ان کی فلم کی وجہ سے پاکستان میں ’غیرت کے نام پر قتل‘ کا مسئلہ اجاگر ہوا ہے اور یہ ان کے لیے کسی بھی ایوارڈ سے بڑھ کر ہے۔

 

 

 

www.bbc.com/urdu/entertainment/2016/02/160229_sharmeen_chinoy_second_oscar_zs

 

 

 


تاریخ اشاعت : 2016-02-29 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں

SiteLock