پاک امریکہ سٹریٹیجک تعلقات ختم ہوکر اب ٹرانزیشنل تعلقات میں بدل چکے ہیں ،ڈاکٹر زبیر اقبال

 

واشنگٹن ڈی سی (محسن ظہیر ) امریکی تھنک ٹنک مڈل ایسٹ انسٹیٹیویٹ کے سکالر اور معروف ماہر معاشیات ڈاکٹر زبیر اقبال کا کہنا ہے کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان جو پہلے سٹریٹیجک تعلقات تھے ، وہ اب ختم ہو چکے ہیں ۔ اب یہ ٹرانزیشنل تعلقات رہ چکے ہیں ۔علاقائی اور عالمی صورتحال کے تناظر میں پاکستان اپنے داخلی استحکام اور معاشی صورتحال کو مضبوط کریگا تو اس پر خارجی دباو ڈالنے والے از خود کمزور ہو جائیں گے ۔

 

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستانی امریکن کانگریس کے 32ویں سالانہ اجلاس کے بعد چینل فائیو سے خصوصی بات چیت کے دوران کیا ۔ڈاکٹر زبیر اقبال نے کہا کہ پاکستان اتنا کمزور ملک نہیں کہ جتنا کوئی اس کو سمجھتا ہوگا، یہ مشکلات کا اپنی وقت مزاحمت سے سامنا کرسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کی خارجہ پالیسی اس کی داخلی پالیسی کی عکاسی ہوتی ہے ۔ پاکستان کی داخلی پالیسی مضبوط ہو گی تو اس کی خارجہ پالیسی از خود مضبوط ہو جائے گی ،یہ وہ پہلو کہ جس پر پاکستان کو جتنی توجہ دینی چاہئیے اتنا توجہ نہیں دی جا رہی ۔

 

ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر زبیر اقبال نے کہا کہ امریکہ اگر پاکستان سے کچھ کروانا چاہتا ہے یا وہ چاہتا ہے کہ پاکستان کچھ زیادہ کرے تو اسے پاکستان کو ترغیبات دینا ہو گی ۔

تاریخ اشاعت : 2016-06-16 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock