بروکلین کے پاکستانی منی ٹرانسفر سٹور پر دن دیہاڑے ڈکیتی ، ہزاروں ڈالرز کا نقصان

نیویارک (محسن ظہیر سے ) کونی آئی لینڈ ایونیو بروکلین (نیویارک ) پر جمعرات کو دن دیہاڑے ایک پاکستانی منی ٹرانسفر کے سٹور پر ڈکیتی کی واردات ہوئی جس میں ڈاکو صبح سویرے سٹور توڑ کو ہزاروں ڈالرز لیکر فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ۔

 

بتایا گیا کہ جمعرات کی صبح جب نیویارک میں شدید برفباری کی وجہ سے بیشتر لوگ گھروں تک محدود تھے، اس دوران دو ڈاکو موسم کا فائدہ اٹھا کر رانا افضل کے سٹور پر پہنچے ۔ پہلے انہوں نے سٹور کے باہر کے شٹر کا تالہ توڑ کر آدھا شٹر اٹھایا اور اندر داخل ہو گئے ۔ اندر داخل ہونے کے بعد انہوں نے سٹور میں منی ٹرانسفر کی رقم جو کہ بتایا گیا ہے کہ بیس ہزار ڈالرز سے زائد تھی ، اٹھائی اور جائے وقوعہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ۔

 

بتایا گیا ہے کہ سٹور پر سیکورٹی الارم بجا اور کچھ دیر کے بعد پولیس پہنچی لیکن اس دوران ڈاکو اپنا کام مکمل کرکے جائے واردات سے دور نکل گئے تھے ۔
تین روز قبل بھی کونی آئی لینڈ ایونیو اور ایونیو سی کے پاس واقع ایک پاکستانی موبائیل فون سٹور پر ایک شخص آٹھ سو ڈالرز مالیت کا فون سٹور سے لیکر فرار ہو گیا تھا۔گذشتہ ماہ کونی آئی لینڈ ایونیو جو کہ نیویارک میں پاکستانی امریکن کمیونٹی کا سب سے بڑا گڑھ ہونے کی وجہ سے لٹل پاکستان بھی کہلاتا ہے ، پر واقع کنگن جیولری سٹور پر بھی ہزاروں ڈالرز مالیت کی جیولری کی کامیاب واردات ہوئی تاہم ملزمان مقامی کمیونٹی نوجوانوں کے ہتھ چڑھ گئے اور حراست میں لے لئے گئے ۔

پاکستانی امریکن کمیونٹی کے ارکان نے چوری اور ڈکیتی کے ان بڑھتے ہوئے واقعات پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ پولیس حکام صورتحال کا جائزہ لیں اور ایسے واقعات کے ادراک کی وجہ سے کونی آئی لینڈ ایونیو پر مسلسل پولیس پٹرولنگ اور سیکورٹی کے انتظامات کو یقینی بنائیں ۔

 

دریں اثناءپاکستانی امریکن کمیونٹی کے قائدین نے کمیونٹی ارکان بالخصوص مرچنٹس سے کہا ہے کہ وہ بھی بہت زیادہ احتیاط سے کام لیں اور سیکورٹی انتظامات کو یقینی بنائیں ۔
۔

تاریخ اشاعت : 2017-02-09 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock