پاکستانی و کشمیری کمیونٹی کا بھارتی مظالم کےخلاف اقوام متحدہ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ


نیو یارک (خصوصی رپورٹ) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف عالمی ضمیر جھنجھوڑنے کے لئے کشمیری و پاکستانی کمیونٹیز نے اقوام متحدہ کے سامنے زبردست مظاہرے کا اہتمام کیا، جس کی قیادت آزاد کشمیر کے سابق وزیراعظم بیرسٹر سلطان محمود چودھری، جس کی قیادت آزاد کشمیر کے سابق وزیراعظم بیرسٹر سلطان محمود چودھری، چوہدری ظہور اختر آف پنیام ،معروف کشمیری ڈاکٹر غلام نبی فائی، کیپٹن خالد شاہین بٹ( وائس چیئر مین اوور سیز کمیشن پنجاب)، سردار سوار خان ، ڈاکٹر آصف الرحمن ،روحیل ڈار،رانا سعید، راجہ یعقوب، قاضی مشتاق ،محمد تاج، سردار امتیاز گڑالوی و دیگر نے کی، مظاہرہ بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج کے جنرل اسمبلی سے خطاب کے دوران ہوا، اس موقع پر بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی، جس میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے، مظاہرین نے پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن میں بھارتی مظالم اور جارحیت کے خلاف نعرے درج تھے، مقررین نے خطاب کرتے ہوئے عالمی برادری سے اپیل کی کہ وہ بھارت کو نہتے اور معصوم کشمیریوں پر ظلم و ستم سے روکے، جو حالیہ عرصہ میں اپنی انتہا کو پہنچ چکا ہے، انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام اپنی آزادی تک جدوجہد ختم نہیں کریں گے، مظاہرے میں پاکستان کی تمام سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی، پاکستان تحریک انصاف کی نوجوان رہنما ناز بلوچ بھی مظاہرے میںشریک تھیں، اقوام متحدہ آنے والے افراد کی بڑی تعداد نے بھی مظاہرے کا مظاہرہ کیا، کشمیری عوام پر مظالم کے خلاف اقوام متحدہ کو قرار بھی پیش کی گئی، منتظمین نے اس موقع پر تمام افراد کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے قیمتی وقت نکال کر ایک بڑے مظاہرے میں شرکت کی۔احتجاجی مظاہرے میں ناصر بٹ ، مرزا خاور بیگ، شبیر گل، افضل گلبہار، وحید سلطان، چوہدری پرویز امرا، ضمیر احمد چوہدری ، غلام مصطفی ،یونس خان ، ظریف، آفتاب شاہ ، چوہدری اسحاق، سردار زاہد ،صوفی نذیر، امتیاز سید (نیوجرسی )،یاسین بھٹی، جاوید صدیقی ،ڈاکٹر گورمیت سنگھ، راجہ یعقوب، یاسین چوہان، جاوید راٹھور،سیم خان، عبدالحمید بٹ ، امتیاز خان نیوجرسی، زمان آفریدی ، عرفان الحسن (میسا چیوسٹ)سمیت پاکستانی و کشمیری امریکن کمیونٹی کی مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی اہم شخصیات اور ارکان نے شرکت کی ۔انہوں نے کہا کہ ہم مظلوم کشمیریوں کے حق میں اس وقت تک آواز بلند کرتے رہیں گے کہ جب تک مسلہ کشمیر حل نہیں ہو جاتا اور کشمیری عوام کو ان کا بنیادی حق خود ارادیت نہیں مل جاتا۔

 

تاریخ اشاعت : 2016-09-29 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں

SiteLock