پاکستانی امریکن کمیونٹی کا سانحہ فلوریڈا سکول کے متاثرین سے اظہار یکجہتی


 

اسلم ڈھلوں کی قیادت میں پاکستانی امریکن ایسویس ایشن آف نیویارک کے زیر اہتمام کونی آئی لینڈ ایونیو بروکلین اور جیکسن ہائٹس پر تعزیتی اجتماعات منعقد کئے گئے

مظاہرین نے ساو¿تھ فلوریڈ سکول میں ہونیوالی شوٹنگ میں ہونیوالی ہلاکتوں کی شدید مذمت کی اور سوگوار خاندانوںکے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا ، زخمیوں کی جلد صحت یابی کےلئے دعا کی گئی

بروکلین اور کوینز میں ہونیوالے اجتماعات میں ظہیر مہر، سیمی اسد، وسیم سید، امین غنی، ڈاکٹر شاہد، شاہد کامریڈ، آصف بیگ کے علاوہ بنگلہ دیشی کمیونٹی کے افراد بھی اس موقع پر شریک ہوئے


نیویارک (اردو نیوز) پاکستانی امریکن ایسوسی ایشن آف نیویارک کے زیر اہتمام فلوریڈا کے سٹون مین ڈگلس ہائی سکول میں فائرنگ کے بدترین سانحہ میں 20 کے لگ بھگ افراد کی ہلاکت کے سوگ میں مرنے والوں کے لواحقین سے اظہار یکجہتی کے لئے خصوصی ریلی اور کینڈل لائٹ ویجل کا اہتمام کیاگیا۔پانی کے بانی کمیونٹی کی ممتاز سماجی، کاروباری اور سیاسی شخصیت چودھری اسلم ڈھلوں کی قیادت میں پہلے بروکلین میں مکی مسجد کے سامنے اظہار یکجہتی کیلئے ایک تعزیتی اجتماع کا انعقاد کیا گیا، اس اجتماع میں پاکستانی کمیونٹی کے افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی اور سانحہ فلوریڈا کے متاثرین سے بھرپور اظہار یکجہتی کے ساتھ سوگوار خاندانوں سے اظہار تعزیت کیا گیا۔ جن کے پیارے اس افسوسناک واقعہ میں بچھڑ گئے۔ جبکہ زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی گئی۔ اس موقع پر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے صدر ڈونلڈٹرمپ اور کانگریس سے مطالبہ کیا کہ امریکہ میں فائرنگ کے بڑھتے ہوئے واقعات خصوصاً سکولوں میں دہشت گردی کی روک تھام کیلئے خاطر خواہ اقدامات کئے جائیں اور ساتھ ہی ساتھ گن کنٹرول کیلئے مناسب قانون سازی کی ضرورت کا احساس کرتے ہوئے اس سلسلے میں سنجیدہ کوششوں کی ضرورت ہے۔ پانی کے بانی کے صدر چودھری اسلم ڈھلوں نے اظہار یکجہتی اور تعزیتی اجتماع میں شرکت کرنے والے تمام افراد کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ سکول میں دہشت گردی کے بدترین واقعہ کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ کسی بھی بے گناہ انسان کا قتل کوئی مذہب بھی اجازت نہیں دیتا۔ امریکہ ہو یا پاکستان یا دنیا میں کہیں بھی انسانی قتل ایک وحشیانہ حرکت ہے۔ جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ فلوریڈا کے سکول میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر بہت افسوس ہوا ہے۔ ٹرمپ انتظامیہ کو اس قسم کے واقعات کا نوٹس لینا چاہئے کیونکہ گزشتہ کئی سالوں سے اجتماعی فائرنگ کے واقعات میں قیمتی جانیں ضائع ہو رہی ہیں۔اب وقت آگیا ہے کہ کانگریس میں اسلحہ پر کنٹرول کیلئے مناسب قانون سازی کی جائے ورنہ بے گناہوں کا خون ناحق اسی طرح بہتا رہے گا۔ انہوں نے شرکاءسے تشکر کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آپ لوگ مختصر نوٹس پر یہاں جمع ہوئے اس کیلئے آپ سب کا بہت زیادہ شکریہ، اسی شام جیکسن ہائٹس (کوئنز) کے ڈایورسٹی پلازہ میں سٹون مین ڈگلس ہائی سکول کے سانحہ کے غم میں کینڈل لائٹ ویجل کا اہتمام کیا گیا، یہ کینڈل لائیٹ ویجل بھی پانی کے زیر اہتمام منعقد ہوئی تھی جس میں کمیونٹی کے افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی اس موقع پر مرنے الوں کی یاد میں شمعیں شرون کی گئیں اور مرنے والوں کے لواحقین سے اظہار یکجہتی کیا گیا۔ اسلم ڈھلوں کی سربراہی میں منعقدہ کینڈل لائیٹ ویجل میں شرکت کرنے والوں میں ظہیر مہر، سیمی اسد، وسیم سید، امین غنی، ڈاکٹر شاہد، شاہد کامریڈ، آصف بیگ کے علاوہ دیگر افراد شامل تھے۔ بنگلہ دیشی کمیونٹی کے افراد بھی اس موقع پر شریک ہوئے۔

 

تاریخ اشاعت : 2018-02-21 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock