یوتھ پر خصوصی توجہ دینی ہو گی ، دنیا کو بتانا ہے کہ اسلام کاعام آدمی کے لئے کیا مطلب ہے

 

نیویارک (خصوصی رپورٹ)اکنا نیویارک کے زیر اہتمام اسلامی مراکز مساجد کے صدور وامام صاحبان اور کمیونٹی لیڈران کی ایک اہم ترین میٹنگ منعقد ہوئی جس میں اس بات پر اتفاق پایا گیا کہ کمیونٹی بالخصوص یوتھ پر خصوصی توجہ دینا ہوگی ۔ اس کے ساتھ ساتھ امام صاحبان نے اس بات پر بھی اتفاق کیا کہ دنیا کو اب یہ بتانا ہے کہ عام آدمی کے لئے اسلام کا کیا مطلب ہے ؟اسلام عام آدمی کی بہتری و فلاح کے لئے کیا پیغام رکھتا ہے ۔


 اکنا کے مرکزی ہیڈ کوارٹر واقع جمیکا کوئنز میں منعقدہ اس میٹنگ کا بنیادی مقصد 24 سے26 مئی تک کنٹیکٹ میں منعقد ہونے والے اکنا کے سالانہ کنونشن کے حوالے سے اسلامی مراکز اور مساجد کے علماءکرام اور صدور اور کمیونٹی لیڈران کے ساتھ تبادلہ خیال اور کنونشن کے بہتر انعقاد کیلئے ان کی تجاویز اور مشوروں سے آگاہی حاصل کرنا تھا۔ میٹنگ کا انعقاد اکنا المرکز کے امام حافظ ظغیر علی کی میزبانی میں ہوا۔ اکنا کے نئے مرکزی امیر نعیم بیگ نے خصوصی شرکت کی انہوں نے اکنا کنونشن اور امریکہ میں مسلم کمیونٹی کو در پیش مسائل کے حوالے سے مفصل خطاب کیا۔

 

نعیم بیگ نے ان مشکلات سے نمٹنے کیلئے مسلم کمیونٹی کو ان کی ذمہ داری سے بھی آگاہ کیا۔ حافظ ظغیر علی نے انتہائی خوش اسلوبی کے ساتھ نظامت کے فرائض انجام دئیے اس بار لیڈرز اور امام میٹنگ میں شرکاءکی تعداد نے گزشتہ تمام ریکارڈ توڑ دئیے۔ اس اجلاس کی خاص بات یہ ہوتی ہے کہ شرکاءسے باری باری مائیک پر اپنا تعارف کرانے کی استدعا کی جاتی ہے امام ظغیر مقررین کو ان کے اداروں اور مراکز سے وابستگی کے حوالے دیکر خطاب کی دعوت دیتے رہے۔

 

کنونشن کے چیئرمین برادر حامد بستی نے کنونشن کے حوالے سے اظہار خیال کیا اور تیاریوں کے حوالے سے تفصیل بیان کی۔ انہوں نے شرکاءسے کنونشن میں زیادہ سے زیادہ شرکت کی اپیل کی۔ اکنا کے سابق امیر ڈاکٹر خورشید خان کی دعا سے تقریب کا اختتام ہوا۔ آخر میں مہمانوں کی تواضع پر تکلف کھانوں سے کی گئی۔

 


 

 

تاریخ اشاعت : 2013-05-08 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock