پاکستانی امریکن ڈیموکریٹ اور ریپبلکن پارٹی کا حصہ بن پاکستان اور پاکستانیوں کی زیادہ خدمت کرسکتے ہیں؛لارڈ نذیر احمد

برطانوی ہاوس آف لارڈز کے پہلے مسلم اور پاکستانی نژاد رکن لارڈ نذیر احمد کا شکاگو میں رانا زاہد کے استقبالیہ سے خطاب ، برطانیہ سے ملک نعیم اور شکاگو کی اہم کمیونٹی شخصیات کی شرکت



 

شکاگو (ندیم اعجاز ملک ) برطانوی ہاوس آف لارڈز کے پہلے مسلم اور پاکستانی و کشمیری نژاد برطانوی رکن لارڈ نذیر احمد نے کہا ہے کہ پاکستانی امریکن ڈیموکریٹ اور ریپبلکن پارٹی کا حصہ بن پاکستان اور پاکستانیوں کی زیادہ خدمت کرسکتے ہیں لہٰذا وہ امریکہ میں رہتے ہوئے پاکستان کی سیاسی جماعتوں کی سیاست کرنے کی بجائے امریکی سیاست میں فعال کردار ادا کریں اور امریکی نظام کے قومی دھارے میں شامل ہوں ۔ یہی کام میں برطانیہ میں کررہا ہوں اور برٹش پاکستانی کمیونٹی کی نسبت پاکستانی امریکن کمیونٹی یہ کردار زیادہ موثر انداز میں ادا کرسکتی ہے ۔ ان ملے جلے خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے اور لندن سے اپنے ساتھ آئے معروف سماجی رہنما ملک نعیم کے اعزاز میں پاکستانی امریکن کمیونٹی شکاگو کی معروف سماجی و کاروباری شخصیت رانا زاہدکی جانب سے ،ان کے ہالیڈے ان ، اٹاسکا ہوٹل میں دئیے جانیوالے استقبالیہ سے خطاب کے دوران کیا۔


پاکستانی امریکن کمیونٹی شکاگو کی معروف سماجی و کاروباری شخصیت رانا زاہد نے شکاگو کے دورے پر آئے برطانوی ہاو¿س آف لارڈز کے پاکستانی نژاد لارڈ نذیر احمد اور ا کے قریبی ساتھی ملک نعیم کے اعزاز میں یہاں اپنے ہالیڈے ان ، اٹاسکا ہوٹل میں پرتکلف استقبالیہ و عشائیہ دیا۔ انہوں نے اپنی اور پوری کمیونٹی کی جانب سے لارڈ نذیر احمد کو امریکہ آمد پر خوش آمدید کہتے ہوئے ان کی خدمات کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا ۔
رانازاہد کے استقبالیہ میں شکاگو میں پاکستانی قونصل جنرل فیصل نیاز ترمذی ، کمرشل قونصلر زاہد خان کے علاوہ رشید چوہدری ، منیر چوہدری ، ڈاکٹر مرتضیٰ ارائیں، رانا سلیم، مسعود ساہی ، نصرت ساہی، طارق جونیجو، طارق ملہانس، راو¿ سالک عبدالمالک مجاہد، سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی کمیونٹی کی اہم شخصیا ت نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔
تلاوت کی سعادت امام موسیٰ اعظم نے حاصل کی سٹیج سیکرٹری کے فرائض ریحان نے انجام دئیے ۔ لارڈ نذیر احمد کے تعارف قونصل جنرل فیصل نیاز ترمذی نے کرواتے ہوئے کہا کہ لارڈ نذیر احمد برطانیہ ہی نہیں دنیا بھر میں کشمیری عوام اور ان کے حقوق کے لئے موثر انداز میں آواز بلند کرنے والے ایک رہنما ہیں ۔ ان کی خدمات کو پاکستان اور کشمیری عوام ہمیشہ قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اور ہمارے لئے اعزاز کی بات ہے کہ ہم انہیں شکاگو میں خوش آمدید کہہ رہے ہیں ۔

 


 

میزبان رانا زاہد نے لارڈ نذیر احمداور ملک نعیم کو شکاگو میں خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ کمیونٹی استقبالیہ میں لارڈ نذیر احمد کی شرکت ہمارے لئے باعث فخر ہے ۔
لارڈ نذیر احمد نے استقبالیہ سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ برطانیہ کی نسبت امریکہ میں بسنے والی پاکستانی امریکن کمیونٹی پر اللہ تعالیٰ کا خاص فضل و کرم ہے ۔ لوگ زیادہ صاحب حیثیت اور کامیاب ہیں ۔ انہوں نے استقبالیہ میں موجود کمیونٹی رہنما رشید چوہدری کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ میں رشید چوہدری سمیت کمیونٹی کی ایسی متعدد شخصیات موجود ہیں کہ جو امریکی سیاسی نظام کو بخوبی سمجھتے ہیں اور سیاسی قائدین سے ان کے قریبی تعلقات ہیں ۔ ان تمام عوامل کی موجودگی کا کمیونٹی کو بھربھرپور فائدہ اٹھانا چاہئیے اور امریکی نظام کا حصہ بننا چاہئیے کیونکہ اگر پاکستانی امریکن کمیونٹی نے سیاسی نظام میں خلا چھوڑ دیا تو اسے کوئی اور پر کر لے گا جو کہ یقینا اپنے مفادات کو اولین ترجیح دے گا۔ لارڈ نذیر احمد نے کہا کہ پاکستانی امریکن کمیونٹی تعلیم یافتہ ہیں ، کامیاب ہیں اور ایک اہم پس منظر کے حامل ہیں ۔میں پہلا مسلم ہاو¿س آف لارڈز میں پہنچا ہوں ۔2001میں جب امریکی آیا تو مجھے یاد ہے کہ میں نے ایک تقریر کی ۔ میں نے کہا کہ می پہلا مسلمان ہوں جو برطانوی ہاوس آف لارڈز میں پہنچا اور اگلی بار جب امریکہ آو¿ں تو کم از کم ایک پاکستانی امریکن کو امریکی کانگریس مین منتخب ہونا چاہئیے ۔انہوںنے کہا کہ امریکہ میں بسنے والے کمیونٹی ارکان اور کمیونٹی کو کچھ کرنا ہوگا۔وہ جتنی بھی سیاسی جماعتیں ہیں ، ان کا حصہ بنیں ۔ ڈیموکریٹ اور ریپبلکن کا حصہ بنا کر پاکستان اور پاکستانیوں کی زیادہ خدمت کرسکتے ہیں ۔


لارڈ نذیر احمد نے کہا کہ میں پاکستان اور پاکستانی ریاست سے محبت کرتا ہوں ۔ مجھے عوام سے محبت ہے ۔ سیاستدان اچھاکام کریں تو انہیں سراہیں گے لیکن اگر غلط کام کریں گے تو ان کے ہر غلط کام کی مخالفت کریں گے ۔ لارڈ نذیر احمد نے کہا کہ امریکہ میں مڈٹرم الیکشن آرہے ہیں ۔ امریکہ میں انڈین کمیونٹی امریکی سیاست میں پاکستانی امریکن سے کہیں زیادہ سرگرم عمل ہیں ۔ اگر ہم بطور کمیونٹی کے طور پر کھڑے نہیں ہونگے تو کوئی نمائندگی نہیں ہوں گی ۔

 

انہوں نے کہا کہ اسلاما فوب ملین آف ڈالرز اسلام کے خلاف استعمال کررہے ہیں ۔ میڈیا میں آکر مسلمانوں اور ان کے عقیدے پر تنقید کرتے ہیں ۔ہمیں دین اسلام کا صحیح امیج اپنے عمل سے دنیا کے سامنے پیش کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگرہم اپنی اگلی نسلوں کو بچانا ہے تو کچھ کرنا ہوگا۔ نسلوں کو بچانے کے لئے کھڑا ہونا ہوگا۔


لارڈ نذیر احمد نے کہا کہ جب میں ہاو¿س آف لارڈ کا رکن بنا تو بڑا تجسس تھا کہ لارڈ کیا ہوتا ہے ، میرا نانا نمبردار تھے جو کہ پنڈ میں بڑی شے ہوتا ہے ۔ جب میں لارڈ بنا تو سب مبارکباد دینے کے لئے آئے ۔میرے ایک کزن نے والدہ سے پوچھا کہ نذیر کیا بنا ہے ؟تو والدہ محترمہ نے کہا کہ نذیر لندن میں نمبردار بنا گیا ہے ۔


لارڈ نذیر احمد نے کہا کہ امریکہ میں بسنے والے پاکستانی بطور کمیونٹی آپ بہت اچھا کام کررہے ہیں ۔ ہمیں پاکستان کی مدد کرنی چاہئیے ۔پاکستانی مصنوعات کو امریکہ میں مارکیٹ کرنا چاہئیے ۔ پاکستانی آم کو امریکہ میں مارکیٹ کرنا چاہئیے ۔سرمائیہ کاری کرنی چاہئیے ۔

انہوں نے کہا کہ سچی بات یہ ہے کہ میں پاکستان کو اپنے مذہب اور دین کا حصہ سمجھتا ہوں ۔پاکستان کے بہت سے مثبت پہلو ہیں اور ہمیں ان پہلوو¿ں کو دنیا بھر میں اجاگر کرنا چاہئیے ۔استقبالیہ سے عبدالمالک مجاہد نے بھی خطاب کیا۔


تاریخ اشاعت : 2014-04-23 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock