سپریم کورٹ کا فیصلہ تاریخی اور متوازن ہے ، ڈاکٹر خالد لقمان

 

نیوجرسی (خصوصی رپورٹ) پاکستان مسلم لیگ (ن) یو ایس اے کے سابق صدر و لیگی رہنما ڈاکٹر خالد لقمان نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ میاں نواز شریف کی نہیں بلکہ حق، سچ اور پاکستان کے عوام کی فتح ہے ، میاں نواز شریف پر جھوٹے الزام عائد کرنیوالے عمران خان ، سراج الحق، آصف زرداری اور شیخ رشید فیصلے کے بعد آئین کے آرٹیکل 62,63پر پورا نہیں اترتے ، وہ جھوٹے ثابت ہو چکے ہیں ۔ سپریم کورٹ کے فاضل بنچ کی جانب سے سب کو شٹ اپ کال دے دی گئی ہے ۔

 


ڈاکٹر خالد لقمان جو کہ ان دنوں امریکہ کے دورے پر ہیں ، نے سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے کے بعد یہاں میڈیا سے بات کرتے ہوئے مزید کہا کہ عمران خان سمیت تخریبی سیاست کرنیوالے کلین بولڈ ہو گئے ہیں ۔ یہ سب پھٹیچر سیاستدان گنتی الٹی پڑھیں یا سیدھی ، اکثریت کا فیصلہ میاں نواز شریف کے حق میں ہے اور اکثریت کو نہ ماننے والوں کو عوام آمروں کی صف میں کھڑا کر دیں گے ۔

 

فاضل عدالت چاہتی تو وزیر اعظم کو جے آئی ٹی آنے تک فرائض منصبی ادا کرنے سے روک سکتی تھی لیکن انہوں نے ایسا نہیں کیا ، جو لوگ ایک طرف فیصلے کو مان رہے ہیں اور دوسری طرف وزیر اعظم کے استعفے کا مطالبہ کررہے ہیں ، وہ منافقانہ سیاست کررہے ہیں اور فیصلے کے بعد خود کو خود ہی بے نقاب کررہے ہیں ۔

 


ڈاکٹر خالد لقمان نے ایک سوال کے جواب میں مزید کہا کہ میاں نواز شریف اور ان کا خاندان کسی بھی قسم کی منی لانڈرنگ میںملوث نہیں رہا ۔ ان کے پا س مکمل ثبوت ہیں جو کہ وہ جے آئی ٹی میں پیش کر دیں گے ۔ عوا م کو یاد رکھنا چاہئیے کہ وہ میاں نواز شریف نے سپریم کورٹ کا بنچ بننے سے پہلے خود ہی کہا تھا کہ پاناما کیس کی تحقیق کے لئے کمیشن قائم کیا جائے کیونکہ ان کی فیملی ون آن ون ثبوت فراہم کریں گے ۔

 

ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر لقمان نے کہا کہ سپریم کورٹ کی پوری ججمنٹ میں محترمہ مریم نواز کا کہیں کوئی ذکر نہیں ۔ اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے پاکستان کے اعلیٰ ترین عدالتی فورم سے شریف فیملی سرخرو ہوئی ہے اور سازش کرنے والے ذلیل و رسوا ہو گئے ہیں ۔

 

تاریخ اشاعت : 2017-04-20 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock