نیویارک میں کسی بھی کمیونٹی کیخلاف نفرت اور تعصب پر مبنی اقدام قابل قبول نہیں ؛ کونسل مین ہائم ڈوئچ

 


نیویارک (پ ر ) نیویارک سٹی کونسل کے رکن ہائم ڈوئچ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ گذشتہ چند دنوںکے دوران ایک کمیونٹی کے ارکان کو ان کے مذہبی عقیدہ کی بنیاد پر ہدف بنایا گیا، یہ انفرادی اقدامات نہایت ہی بدقسمت اور کسی بھی طور پر قابل قبول نہیں ہیں ۔ اپنے بیان میں برائٹن بیچ، بروکلین سے تعلق رکھنے والے کونسل مین نے مزید کہا کہ ہمارے شہر میں تشدد، تعصب اور اشتعال انگیزی کی کوئی جگہ نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ میں نے نیویارک پویس حکام کے علاوہ متعدد کلرجی ممبرز سے خود ملاقاتیں کیں تاکہ اس امر کو یقینی بنا سکے کہ کسی بھی کمیونٹی کا کوئی بھی شخص کسی بھی جگہ پر اور اپنی عبادت گاہ میں غیر محفوظ نہ ہو۔کونسل مین ڈوئچ نے کہا کہ ہماری کمیونٹیز کثیر الثقافت ہیں۔ ہر قسم کے رنگ و نسل کے لوگ نہ صرف ساتھ ساتھ رہتے ہیں بلکہ اعتماد اور ہم آہنگی سے اہنے تعلقات اور رشتوں کو فروغ دیتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ دنیا میں بروکلین کی ایک پہچان ہے کہ یہاں لوگ ایک گلدستے کی طرح ملکر رہتے ہیں ۔
کونسل مین ہائم ڈوئچ نے مزید کہا کہ میں تشدد، نفرت ، تعصب اور عدم برداشت کے اقدامات کی مذمت کرتا ہوں ۔امریکہ میں قانون کی حکمرانی ہے اور یہاں جو کوئی بھی قانون کی خلاف ورزی کرے ، اس کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جانی چاہئیے ۔
کونسل مین نے کہا کہ سٹی کونسل کے نمائندہ کے طور پر میں اپنے حلقے کے لوگوں کو ہر قسم کے متعصبانہ اور جانبدارانہ اقدامات سے محفوظ رکھنے کے لئے پر عزم ہوں ۔انہوں نے کہاکہ میںاپنی مسلم کمیونٹی سے تعلقات کی نہایت قدر کرتا ہوں اور میں کونسل مین کی حیثیت سے بلا امتاز ان کی نمائندگی کرتا رہوں گا۔
ہائم ڈوئچ نے کہا کہ ہماری ڈائیورس کمیونٹیز کو اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک دوسرے کی حفاظت کو یقینی بنانے میں بھی اپنا کردار اداکرتے رہنا چاہئیے ۔ہم کسی کو اجازت نہیں دیں گے کہ اس آزادی پر آنچ آنے دے کہ جس سے ہم سب لطف اندوز ہوتے ہیں ۔

تاریخ اشاعت : 2014-07-23 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock